درود شریف کی برکات….

حضرت ابی بن کعب رضی اللہ عنہ کہتے ہیں کہ میں نے عرض کیا، “یا رسول اللہ صلی ﷲ علیہ وآلہ وسلم میں آپ پر بکثرت درود بھیجتا ہوں، لہٰذا اس کے لئے کتنا وقت مقرر کروں؟ 

آپ صلی ﷲ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا، “جتنا چاہو۔ 
میں نے عرض کیا، “اپنی عبادت کے وقت کا چوتھا حصہ مقرر کر لوں؟ 
آپ صلی ﷲ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا، “جتنا چاہو کر لو لیکن اگر اس سے زیادہ کرو تو بہتر ہے۔ 
میں نے عرض کیا، “آدھا وقت؟ 
آپ نے فرمایا، “جتنا چاہو، لیکن اس سے بھی زیادہ بہتر ہے۔ 
میں نے عرض کیا، “دو تہائی وقت؟ 
آپ صلی ﷲ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا،”جتنا چاہو، لیکن اگر اس سے بھی زیادہ کرو تو بہتر ہے۔ 
میں نے عرض کیا، “تو پھر میں اپنے وظیفے کے پورے وقت میں آپ صلی ﷲ علیہ وآلہ وسلم پر درود پڑھا کروں گا۔ 
آپ صلی ﷲ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا، “پھر اس سے تمہاری (دونوں جہانوں کی) تمام فکریں دور ہو جائیں گی اور تمہارے گناہ معاف کر دئیے جائیں گے۔ 
(جامع ترمذی )
حضرت علی بن ابی طالب رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا 
“بخیل وہ ہے جس کے سامنے میرا ذکر ہو اور وہ مجھ پر درود نہ بھیجے۔ 
(جامع ترمذی )

The Excellence of Reciting the Durood Sharif

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s