جنید جمشید : چار کروڑ روپے کے عوض گانے کی آفر ٹھکرا دی

_92888351_mediaitem92888350مولانا طارق جمیل نے کہا ہے کہ جنید جمشید ہمیشہ ہی کہتا تھا کہ میں اللہ اور اس کے رسول کے مشن کو لے کر چلتا رہوں اور اسی راستے میں میری زندگی تمام ہو۔ جنید جمشید بہت ہی اعلیٰ اخلاق کا مالک تھا ، اس نے شوبزنس کی دنیا چھوڑ کر پیچھے مڑ کر نہیں دیکھا۔ نجی ٹی وی ایکسپریس نیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے مولانا طارق جمیل کا کہنا تھا کہ جنید جمشید بہت شفیق باپ تھا بلکہ زندگی کے ہر پہلو میں اس کی اخلاقی صفت بہت نمایاں تھی، میں نے زندگی میں جنید جمشید جیسے اخلاق والے بہت کم دیکھے ہیں ۔ آخری مرتبہ چترال میں ہی پرسوں اس سے رابطہ ہوا تھا ۔ میرا، سہیل اور جنید جمشید کا پروگرام تھا کہ سعید انور کی جماعت کی نصرت کیلئے جائیں گے لیکن میں مصروفیت کی وجہ سے جا نہیں سکا۔maxresdefault

انہوں نے کہا کہ جنید جمشید مجھ سے ہمیشہ ہی کہتا تھا کہ میں اللہ اور اس کے رسول کے مشن کو لے کر چلتا رہوں اور اسی راستے میں میری زندگی تمام ہو، اس نے شوبزنس کی دنیا چھوڑنے کے بعد کبھی بھی پیچھے مڑ کر نہیں دیکھا۔ ایک وقت ایسا بھی آیا کہ اس نے مجھے فون کرکے بتایا کہ اس کے پاس اپنی والدہ کی دوا کے بھی پیسے نہیں ہیں۔ اس نے یہ بھی بتایا کہ مجھے پیپسی والے چار کروڑ روپے دے رہے ہیں کہ ایک گانا گا دو لیکن میں نے انکار کردیا ہے۔

مولانا طارق جمیل کا کہنا تھا کہ جنید جمشیداور میں نے 2007 سے 2016 تک تمام حج اکٹھے کیے، ہم دونوں کسی دنیاوی لالچ کے بغیر جے جے کے نام سے حاجیوں کو خدمت کیلئے لے کر جاتے تھے۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s